ہمارے بارے میں کچھ
تنازعات کے تصفیےکے بین الاقوامی ادارے سرچ فار کامن گراؤنڈ کی ویب سائٹ سی جی نیوز کی طرف سے ان تمام لکھنے والوں کو خوش آمدید کہا جاتا ہے جو مسلم مغربی تعلقات پر اثر انداز ہونے والے مسائل پر اپنے نقطہ نظر کا اظہار کرنا چاہیں۔

سی جی نیوز کے مضامین تعمیری انداز لئے ہوتے ہیں جن میں مسائل کا حل پیش کرنے، دوسروں کے انسانی پہلو اجاگر کرنے، امید پیدا کرنے اور/یا متعدد مسائل کا احاطہ کرنے کی کوشش کی جاتی ہے۔ دیگر کے علاوہ ان میں درج ذیل موضوعات شامل ہوتے ہیں:
  • مغرب میں مسلمان
  • عرب اسرائیلی تنازعہ
  • مسلم اکثریتی ممالک میں سماجی اور سیاسی واقعات
  • بین المذاہب مکالمہ
  • سول سوسائٹی کی تحاریک، بالخصوص تحاریک نسواں

It takes 200+ hours a week to produce CGNews. We rely on readers like you to make it happen. If you find our stories informative or inspiring, help us share these underreported perspectives with audiences around the world.

Monthly:

Donate:

Or, support us with a one-time donation.

سی جی نیوز کے مضامین 45 سے زائد ممالک سے مُصنفین تحریر کرتے ہیں۔ یہ مضامین37000 سے زیادہ مرتبہ دوبارہ شائع ہو چکے ہیں - یعنی ہر مضمون اوسطاً چودہ مرتبہ سے زیادہ دوبارہ شائع ہوا ہے۔ ان مصنفین میں 50٪ سے زیادہ خواتین ہیں جنہوں نے حالیہ سالوں میں مسلم مغربی موضوعات پر لکھا ہے۔ سی جی نیوز کی طرف سے تقسیم ہونے والے مضامین دنیا بھر میں 4800 سے زیادہ صحافتی اداروں نے شائع کیے ہیں، جن میں ہمارے تقسیم کنندہ شریکِ کار میکلاچی ۔ ٹربیون انفارمیشن سروس اور اس کے 450 عالمی خبری دفاتر بھی شامل ہیں۔


سی جی نیوز کے مضامین:
  • سرحدوں کی تقسیم سے بالا تر ہیں
    "یہی وہ کام ہے جو ہمیں مُسلم دنیا کے بارے میں اپنے غلط تصوّرات کو زائل کرنے میں مدد دیتا ہے۔" -- ریاست ہائے متحدہ امریکہ سے ایک قاری

  • لوگوں کو ایک دوسرے سے جوڑتے ہیں
    "میں نے جو اداریہ لکھا تھا اس نے نئے دروازے کھول دیئے اور دوسروں کو مُتاثر کیا ہے۔ میں وہ اداریہ ابھی اٹلی کی ایک امن کانفرنس میں پیش کر کے لَوٹا ہوں۔ آپ نے مجھے جو موقع دیا اس نے میری آنکھیں کھول دی ہیں اور مجھے بہت متاثر کیا ہے۔ میں نے جس خیال پر قلم اُٹھایا تھا اُسے اب مزید بہتر بنا رہا ہوں اور دیکھ رہا ہوں کہ اسے کس طرح عملی طور پر نافذ کیا جا سکتا ہے۔" -- سی جی نیوز کا ایک مصنف

  • عمل پر آمادہ کرتے ہیں
    " (اُن سب کی وجہ سے جنہوں نے میرا مضمون شائع اور تقسیم کرنے میں کردار ادا کیا) مجھے بہت سے مفید تبصرے اور حوصلہ افزائی ملی ہے۔ یہاں تک کہ سیاسی ترقی کی وزارت نے مجھ سے مُلاقات کرکے مضمون کے مندرجات پر گفتگو کرنے کو کہا ہے۔" -- سی جی نیوز کا ایک مصنف
     
    "ریورنڈ لیوینڈر کے مضمون نے حالیہ مایوس کُن واقعات پر بے یارو مددگار محسوس کرنے اور دل گرفتہ ہونے کی بجائے کچھ کر کے دکھانے کی تحریک دی ہے۔ اس لئے میں اس مضمون کو دوسروں تک بھی پہنچاؤں گا اور اُمید ہے کہ یہ مضمون دنیا کے اِس خطّے میں رہنے والوں پر یہ آشکار کرے گا کہ مغرب کے سارے لوگ جاہل اور غیر منطقی نہیں ہوتے۔" -- سی جی نیوز انگریزی ایڈیشن کا ایک قاری

  • اُمید فراہم کرتے ہیں
    " عام ذرائع ابلاغ مجھے چاہے کچھ بھی سُناتے رہیں، دنیا میں بہت سے ایسے لوگ موجود ہیں جو اِسے سب کے لئے ایک بہتر جگہ بنانے کے خواہش مند ہیں۔" -- سی جی نیوز کا ایک قاری
     
    "کہا جاتا ہے کہ قلم بالآخر تلوار سے زیادہ طاقتور ثابت ہوتا ہے۔ یہ مقولہ موجودہ زمانے پر صادق آتا ہے جب غیر موزوں اطلاعات اور معلومات خوف اور نفرت کو جنم دے رہی ہیں۔ اس دور میں دنیا دو انتہاؤں میں مُنقسم ہو چکی ہے: ایک انتہا خوف اور نفرت کی ہے جبکہ دوسری کا محور اقتصادی استحکام اور اخلاقیات ہے۔ ان حالات میں آپ کے مضمون نے اُمید کی کِرن دکھائی ہے۔" -- پر قطر سے ایک قاری کا تبصرہ

  • دقیانوسی تصوّرات کو زائل کرتے ہیں
    "میں یہ سمجھتا تھا کہ مغرب والے اور مُسلمان ایک دوسرے سے گہری نفرت کرتے ہیں لیکن یہ بدگمانی بعض انتہا پسند آرا سے متاثر ہونے اور ایک دوسرے کی مخالفت کرنے والوں کی بعض قدامت پسند تحریروں کا مطالعہ کرنے سے بنی تھی۔ سی جی نیوز نے ان تصوّرات کو ختم کرنے میں میری مدد کی ہے۔" -- یمن سے سی جی نیوز عربی ایڈیشن کے ایک قاری کی رائے

براہ کرم سی جی نیوز ادارتی بورڈ کو مضامین ارسال کیجئے یا فیڈ بیک اور رائے اس ای میل پر ارسال کیجئے cgnews@sfcg.org.

سی جی نیوز" سرچ فار کامن گراؤنڈ کے پروگرام "انسانیت میں شریک کار" اور القدس پروگرام کی پیش کش ہے۔